Tuesday 22 August, 2017

ایگزیکٹ سکینڈل: شعیب شیخ کو رشوت لے کر بری کرنے کا الزام، سیشن جج معطل


اسلام آباد: (کوہ نور نیوز) ایگزیکٹ جعلی ڈگری سکینڈل میں ایک اور مبینہ سکینڈل سامنے آ گیا۔ جج پر ملزم شعیب شیخ اور دیگر کو رشوت لے کر بری کرنے کا الزام لگایا گیا ہے۔ اسلام آباد ہائیکورٹ نے ایڈیشنل سیشن جج پرویز القادر میمن کو معطل کر دیا۔ ایڈیشنل سیشن جج پرویز القادر میمن کی معطلی کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا گیا۔ اسلام آباد ہائیکورٹ نے نوکری سے پرویز القادر کو برخاست کرنے کا شوکاز نوٹس بھی جاری کر دیا۔ پرویز القادر میمن کی معطلی کا نوٹیفکیشن 7 جون جبکہ شوکاز نوٹس 9 جون کو جاری ہوا۔ ایڈیشنل سیشن جج سے ملزمان کو 50 لاکھ روپے رشوت لے کر بری کرنے کے الزام پر 14 دن میں وضاحت طلب کی گئی ہے۔ شوکاز نوٹس میں کہا گیا ہے کہ جواب نہ دینے کی صورت میں یک طرفہ کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ پرویز القادر نے شعیب شیخ سمیت دیگر ملزمان کو 31 اکتوبر 2016ء کو بری کیا تھا۔ پرویز القادر میمن کو نوکری سے برخاست کرنے کی سفارش ڈیپارٹمنٹل پروموشن کمیٹی نے کی ہے۔ ایڈیشنل سیشن جج پرویز القادر میمن نے شوکاز نوٹس کو اسلام آباد ہائیکورٹ میں چیلنج کر دیا ہے۔ اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس عامر فاروق جمعہ کو درخواست کی سماعت کریں گے۔

پروگرام گائیڈ