Friday 22 September, 2017

بھارت : گائے کا گوشت کھانے والوں کو پھانسی دینے کا مطالبہ


گوا : (کوہ نور نیوز) بھارت کی انتہا پسند خاتون رہنما سدھوی سرسوتی نے مطالبہ کیا ہے کہ جو لوگ خود کو اعلیٰ درجے کا شہری ظاہر کرنے کیلئے گائے کا گوشت کھاتے ہیں انہیں پھانسی دی جائے ، ایک بھارتی اخبار کے مطابق انتہا پسندوں کے ایک اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بھارت میں بیف کھانا ‘‘اسٹیٹس سمبل’’ بن گیا ہے ، اس روش کا خاتمہ کرنے کیلئے بیف کھانے والوں کو سخت ترین سزا ضروری ہو گئی ہے۔ دریں اثنا اپوزیشن جماعت کانگریس کے رہنمائوں نے انتہا پسند خاتون لیڈر کے اس خطاب پر شدید اظہار تشویش کرتے ہوئے کہا کہ اس سے ملک میں مذہبی کشیدگی پھیل جائے گی ، انہوں نے بی جے پی کی قیادت میں قائم گوا کی ریاستی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ اس متعصبانہ اور شرانگیز بیان پر سدھوی سرسوتی کیخلاف مقدمہ درج کر کے سخت ترین کارروائی کی جائے۔ واضح رہے کہ رام ناتھی نامی گائوں میں ہندو انتہا پسند گروپوں کے ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سدھوی سرسوتی نے کہا کہ ملک بھر میں گائے کا احترام ، اس کی حفاظت اور احترام کو یقینی بنانا حکومت کی اولین ذمے داری ہے ، گائے کا گوشت کھانے والوں کو طاقت کے ذریعے روکنا ضروری ہو گیا ہے ، انہوں نے ہندوئوں کو تلقین کی کہ وہ اپنے پاس اسلحہ ضرور رکھیں ، اگر انہوں نے ایسا نہ کیا تو مخالف انہیں صفحہ ہستی سے ہی مٹادیں گے ۔

پروگرام گائیڈ