Saturday 24 June, 2017

شرجیل خان کو پی سی بی نے ’’گمشدہ‘‘ قرار دیدیا


لاہور: (کوہ نور نیوز) پی ایس ایل اسپاٹ فکسنگ کیس کی سماعت کرنے والے ٹریبیونل کی کارروائی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پی سی بی کے قانونی مشیر تفضل رضوی نے کہا کہ شرجیل کے گواہوں پر جرح ہوئی تو کئی سوالات پر ان کا کہنا تھا کہ اس بارے میں اوپنر ہی وضاحت کرسکتے ہیں لیکن وہ لاپتہ ہیں، اب تو ان کی شکل بھی بھولنے لگی ہے، راہ فرار اختیار کرنے سے تو یہی ظاہر ہوتا ہے کہ انھیں اندازہ ہوگیا سچ کا سامنا نہیں کرپائیں گے،کسی نے جرم نہ کیا ہو تو اس کو جرح کی کوئی فکر نہیں ہوتی،میرا نہیں خیال کہ اوپنر اب ٹریبیونل کے سامنے پیش ہونگے تاہم کارروائی جاری رہے گی۔ ہم چاہتے ہیں کہ کیس کا جلد فیصلہ ہو۔ تفضل رضوی نے کہا کہ شرجیل خان کے وکیل کا اصرار ہے کہ ناصر جمشید کیس میں انگلینڈ کی نیشنل کرائم ایجنسی نے جو شواہد جمع کررکھے ہیں، وہ ٹریبیونل کی کارروائی کا حصہ نہ بنائے جائیں،شاید ان کو شک ہے کہ ان میں بہت سی باتیں ان کیخلاف جائیں گی، اس بارے میں فی الحال کچھ نہیں کہا جا سکتا،ہوسکتا ہے کہ اوپنر کے حق میں جانے والی بھی کوئی چیز ہو، بہرحال ان شواہد کو ریکارڈ کا حصہ بنائے جانے کا فیصلہ ٹریبیونل کو کرنا ہے، اس سے پی سی بی کو کوئی فرق نہیں پڑتا، کرکٹرز کیخلاف پہلے سے موجود ثبوت بھی موقف کو درست ثابت کرنے کیلیے کافی ہیں۔

پروگرام گائیڈ