Saturday 21 October, 2017

سنجے دت نے شوٹنگ کے دوران تلوار نکال کر سب کے ہوش اڑا دئیے


ممبئی: (کوہ نور نیوز) ہدایتکار راجکمار ہیرانی سنجے دت کی زندگی پر فلم بنا رہے ہیں جس میں ان کے بچپن سے لے کر منشیات کا عادی ہونے اور اس سے نمٹنے کے ساتھ ان کے فلمی کیرئیر میں آنے والے اتار چڑھاؤ کے بارے میں معلومات فراہم کی جائیں گی۔ سنجے دت کی زندگی کئی دلچسپ واقعات سے بھری پڑی ہے جیسے 90 کی دہائی میں فلم کی شوٹنگ کے دوران انہوں نے چند غنڈوں کو مزہ چکھانے کیلئے تلوار نکال لی تھی۔ واقعہ کچھ اس طرح ہے کہ 1990 میں سنجے دت فلم ’’جینے دو‘‘ کی شوٹنگ میں مصروف تھے جسے دیکھنے کیلئے لوگوں کی بڑی تعداد بھی موجود تھی، شوٹنگ کے دوران کچھ لوگوں نے سنجے دت کی اداکاری کو برا بھلا کہنا شروع کر دیا تاہم ان کی جانب سے عوام کی تنقید کو کوئی اہمیت نہ دی گئی، لیکن ان افراد نے سنجے دت کو طیش دلانے کے لئے اُن کی فیملی پر جملے کسنا شروع کر دیئے۔ اوباش نوجوانوں کی اس حرکت پر سنجے دت غصے سے آگ بگولہ ہو گئے اور انہوں نے لوگوں کو اس طرح کی حرکات کرنے سے باز رہنے کا بھی کہا لیکن وہاں موجود چند غنڈوں نے انہیں لڑائی کا چیلنج دیتے ہوئے کہا کہ اگر ہمت ہے تو شوٹنگ بعد آ کر ہم سے لڑو، پتہ چلے گا حقیقی ہیرو کون ہے۔ معاملہ گھمبیر ہوتا دیکھ کر عملے نے شوٹنگ رکوا کر سنجے دت کو واپس ہوٹل بھیج دیا لیکن سنجو بابا نے اس بات کو یاد رکھا اور اگلے روز شوٹنگ پر پہنچ کر غنڈوں کا انتظار کرنے لگے، جیسے ہی وہ اوباش نوجوان شوٹنگ دیکھنے کے لئے پہنچے تو سنجے دت نے تلوار نیام سے باہر نکال کر ہوا میں لہرانی شروع کردی اور اپنی گرج دار آواز میں چلانے لگے کہ اگر ہمت ہے تو آؤ میرے سامنے، ایک کو بھی نہیں چھوڑوں گا۔ سنجے دت کے ہاتھ میں تلواردیکھ کر وہ غنڈے بھاگ کھڑے ہوئے اور 10 منٹ بعد ہی وہاں سناٹا چھا گیا لیکن اس واقعہ کے بعد پھر کبھی کسی نے سنجے دت کو شوٹنگ کے دوران پریشان نہیں کیا۔ واضح رہے کہ سنجے دت کی زندگی پر بننے والی فلم میں اداکار رنبیر کپور مرکزی کردار ادا کر رہے ہیں، فلم میں ان کے علاوہ پاریش راول، سونم کپور اور منیشا کوئرالہ بھی اہم کرداروں میں نظر آئیں گی۔

پروگرام گائیڈ