Saturday 21 October, 2017

اثاثہ جات ریفرنس: اسحاق ڈار کے بینک اکاؤنٹ کی تفصیلات عدالت میں جمع


اسلام آباد: (کوہ نور نیوز) احتساب عدالت میں آمدن سے زائد اثاثوں کے ریفرنس میں وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے بینک اکاؤنٹ کی تفصیلات جمع کرا دیں گئیں۔ وفاقی وزیرخزانہ اسحاق ڈار کے خلاف اثاثہ جات ریفرنس کی سماعت احتساب عدالت میں جاری ہے، کیس کی سماعت جج محمد بشیر کر رہے ہیں۔ نجی بینک کے افسر طارق جاوید نے بیان قلمبند کراتے ہوئے کہا نیب نے مجھے میرے بینک کے ذریعے بلایا، کہا گیا کہ اسحاق ڈارکی تصدیق شدہ بینک تفصیلات نیب کوفراہم کریں، کھاتا 1991 میں کھولا گیا، مصدقہ دستاویز نیب کے حوالے کر دیں، جس پر خواجہ حارث نے سوال کیا کیا کاغذات اصلی ہیں؟۔ جج محمد بشیر نے کہا استغاثہ کے گواہ طارق جاوید اپنا بیان ریکارڈ کروا رہے ہیں، بے نامی دار کو نوٹس ہونا چاہیے تا کہ اسے علم ہو کہ اسکی جائیداد زیربحث ہے، خواجہ حارث نے کہا ایسی کوئی جائیداد نہیں ہے، اگر شواہد ملیں تو پھر آپ بلا لیں۔ وکیل خواجہ حارث نے عدالت سے استدعا کی کہ الیکٹرونک سٹیٹمنٹ کو بنیادی شہادت تسلیم نہیں کیا جا سکتا اور تصدیق تک اسے ریکارڈ کا حصہ نہ بنایا جائے۔ جس پر پراسیکیوٹر نیب نے کہا یہ کام عدالت نے کرنا ہے۔ واضح رہے بینک افسر اشتیاق علی بھی اسحاق ڈار کے خلاف بیان قلمبند کرا چکے ہیں جس میں انہوں نے کہا تھا کہ اسحاق ڈار نے اہلیہ کے نام بنک اکاونٹ کھلوایا۔ اسحاق ڈار کی پیشی کے موقع پر احتساب عدالت میں سکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے، پولیس اور ایف سی کے 200 سکیورٹی اہلکار تعینات ہیں۔

پروگرام گائیڈ