Saturday 21 October, 2017

مشعال خان قتل کیس میں 33 عینی شاہدین کے بیانات قلم بند


ہری پور: (کوہ نور نیوز) انسداد ِدہشت گردی کی عدالت نے مشعال خان قتل کے مزید پانچ عینی شاہدین کے بیانات قلم بند کیے جس کے بعد حلفیہ بیان دینے والوں کی تعداد 33 ہوگئی ہے۔ تفصیلات کے مطابق انسدادِ دہشت گردی کی عدالت ہری پور کی سنٹرل جیل میں مشعال خان نامی صحافت کے طالب علم کے قتل کیس کی سماعت کررہی ہے ‘ جسے مجمع میں بہیمانہ طریقے سے قتل کیا گیا تھا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ سماعت کے دوران اے ٹی سی کے جج فضل سبحان نے 25 ملزمان کی ضمانت کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا ہے اور یہ فیصلہ 20 اکتوبر کو سنایا جائے گا۔ یاد رہے کہ 23 سالہ مشعال مردان میں ولی خان یونی ورسٹی کا طالب علم تھا‘ اسے رواں سال 13 اپریل کو بھپرے ہوئے یونی ورسٹی کیمپس میں طالب علموں کے جمِ غفیر نے بدترین تشدد کرنےکے بعد گولی مار کر قتل کردیا تھا۔ اس کے بارے میں افواہ پھیل گئی تھی کہ مشعال نےاہانتِ مذہب پر مبنی کچھ مواد سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کیا ہے۔

پروگرام گائیڈ