افضل گورو کی برسی پر مقبوضہ کشمیر میں ہڑتال، حریت قیادت نظربند

سری نگر: (کوہ نور نیوز) کشمیر میڈیا سروس کے مطابق حریت قیادت سید علی گیلانی، میرواعظ عمر فاروق اور یاسین ملک نے افضل گورو کی پانچویں برسی پر مکمل شٹرڈاؤن ہڑتال اور پرامن احتجاج کی کال دی ہے جس پر وادی میں مکمل ہڑتال اور سڑکوں پر ٹریفک نہ ہونے کے برابر ہے۔ دوسری جانب قابض انتظامیہ نے احتجاج ناکام بنانے کے لئے حریت رہنماؤں کو گھروں میں ہی نظربند کردیا، سید علی گیلانی، یاسین ملک، میرواعظ عمر فاروق، محمد اشرف سہری، غلام احمد گلزار، مختار احمد وزا، بلال صدیقی اور محمد اشرف سمیت دیگر کو نظربند کیا گیا ہے۔ کٹھ پتلی انتظامیہ نے بھارت مخالف احتجاج کو روکنے کے لئے سری نگر اور بعض شمالی علاقوں میں سخت پابندیاں لگاتے ہوئے ٹرین سروس کو بھی معطل کردیا۔ خیال رہے کہ بھارت نے حریت رہنما افضل گورو کو پارلیمنٹ حملہ کیس کا ملزم قرار دیتے ہوئے 9 فروری 2013 کو تہاڑ جیل میں پھانسی دینے کے بعد وہی دفن کردیا تھا۔ اس سے قبل حریت رہنما مقبول بھٹ کو بھی تہاڑ جیل میں ہی پھانسی دینے کے بعد دفن کیا جاچکا ہے جب کہ حریت قیادت کا مطالبہ ہے کہ شہدا کے جسد تہاڑ جیل سے مقبوضہ وادی میں منتقل کیے جائیں۔