ایاسا کا ایکاو آڈٹ کی بنیاد پر یورپی روٹ کی پابندیاں ختم نہ کرنے کا فیصلہ

کراچی: (ویب ڈیسک) یورپین یونین ایوی ایشن سیفٹی ایجنسی (ایاسا) نے انٹرنیشنل سول ایوی ایشن آرگنائزیشن (ایکاو ) آڈٹ کی بنیاد پر یورپی روٹ کی پابندیاں ختم نہ کرنے کا فیصلہ کرلیا۔ یورپی ایوی ایشن سیفٹی ایجنسی نے پی آئی اے کے خط کا جواب دے دیا۔ خط ایاسا کے ایگزیکٹیو ڈائریکٹر نے سی ای او پی آئی اے کو لکھا، جس میں کہا گیا کہ پاکستانی ائیرلائنز سے پابندیاں ہٹانے کیلئے ایاسا سول ایوی ایشن کا آڈٹ کروائے گی، ایاسا آڈٹ کے بعد یورپی روٹ کی پابندیاں ختم کرنے کا حتمی فیصلہ کیا جائے گا، عالمی ہوا بازی کی تنظیم اکاو آڈٹ کا یورپی روٹ پر پابندی سے کوئی تعلق نہیں، ایاسا اکاو آڈٹ کے بعد بھی سول ایوی ایشن کی کارکردگی کا جائزہ لے گی۔ خط کے متن میں مزید کہا گیا کہ ایاسا تیسرے ملک کے ذریعے پابندی اٹھانے کے لئے آڈٹ کروا سکتا ہے، پابندیاں ہٹانے کے لیے ایاسا متعلقہ حکام سے مشاورت کرے گا، پیشہ وارنہ لائسنس سے متعلق ایاسا حکام کی تحقیقات اب بھی جاری ہیں، کورونا کے باعث ایاسا عملے کی سفری سرگرمیاں محدود ہیں، کورونا صورتحال بہتر ہوتے ہی آڈٹ کروایا جائے گا۔ ایاسا نے پی آئی اے کے سیفٹی مینجمنٹ سسٹم سے متعلق اقدامات پر اعتماد کا اظہار کر دیا۔